• 24newspk

”اگر وہ مجھے بڑا بھائی سمجھتا ہے تو اس ورلڈ کپ کے بعد کپتانی چھوڑ دے“ یا اگر میرے چاچو سمجھتے ہیں تو


24 نیوز پی کے:ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ میں پاکستان ٹیم کی مسلسل خراب کارکردگی کے بعد سابق کپتان یونس خان اور بابر اعظم کے کزن کامران اکمل نے انہیں قیادت سے استعفی دینے کا مشورہ دیا ہے اور کہا ہے کہ وہ بیٹنگ پر توجہ دیں تاکہ ان کا کیریئر طویل ہوسکے۔ نجی ٹی وی پر انٹر ویو میں یونس خان نے کہا کہچار بار کپتان بنا، کپتان پر دو سری چیزوں کا اضافی بوجھ ہوتا ہے جس سے کارکردگی متاثر ہوتی ہے۔


بابر اعظم ایک لیڈر کی طرح نہیں سوچ رہے، ہر بار ایک ہی غلطی دہرا رہے ہیں۔ میں نے بھی چار بار کپتانی چھوڑی ہے، بابر اعظم ایک بہترین بیٹسمین ہیں انہیں بس اپنی ٹیم کے لیے اچھے رنز دینے چاہیے جس کی ٹیم کو بہت ضرورت ہے۔ کامران اکمل نے کہا کہ اگر بابر مجھے اپنا بڑا بھائی سمجھتے ہیں تو میں اسے یہی مشورہ دوں گا کہ ورلڈ کپ کے بعد کپتانی چھوڑ دینی چاہیے۔


اگر پی سی بی کو بابر اعظم سے 25 ہزار رنز یا 22 ہزار رنز کروانے ہیں تو انہیں بابر سے کپتانی نہیں کروانی چاہیے، کیوں کہ پچھلے دنوں میں کئی میچز میں بابر پریشر میں کھیل رہا جس سے اس کی پرفارمنس نظر نہیں آرہی ہے۔ اگر پی سی بی یا بابر اس بات کو سمجھتے ہیں تو انہیں کپتانی چھوڑ دینی چاہیے جیسے ویرات کوہلی نے چھوڑا اور اپنی فارم میں واپس آیا ہے۔ پاکستانی کرکٹ ٹیم میں کوئی اور بابر جیسا بیٹر نہیں ہے، انہیں کپتانی چھوڑ کر پرفارمنس میں توجہ دینی چاہیے ورنہ پاکستانی ٹیم کو اس سے بہت نقصان ہوگا۔


352 views0 comments