• 24News pk

ترک ڈرامہ ارطغرل غازی کاپاکستانی عوام میں مقبولیت



اسلام آباد (24 نیوز پی کے) ترکی کا مشہور ڈرامہ سیریز ارطغرل غازی جو آجکل پاکستان میں بھی بے حد مقبول ہے اور اس ڈرامے کا پاکستان کے عوام پر بڑا اثر پڑا ہے اور لوگوں کو سلطنت عثمانیہ کے بارے پتا چلا ہے کہ کیسے سلطنت عثمانیہ کا قیام ہوا کیسے پوری دنیا پر حکومت قائم ہوئی؟اور کیا کیا مشکلات یش آئیں؟ ارطغرل غازی ڈرامے میں دکھایا گیا ہے کہ قائی قبیلہ جس کی قیادت سلیمان نے اپنے قبیلے کو لے کر ان گروہ کے خلاف جنگ کا اعلان کیا جو مظلوموں پر ظلم کرتے تھے ان کا حق چھین لیتے تھے.


پاکستان میں ارطغرل غازی اتنا مقبول ہو گیا ہے لوگ اس ڈرامے کے دیوانے ہوگئے ہیں اور لوگ اب ہر بات میں ارطغرل غازی کا ذکر کرتے ہیں .ارطغرل غازی ڈرامے کے چاہنے والوں میں دن بدن اضافہ ہو رہا ہے.


ڈرامے میں جس طرح اداکاری کی ہے وہ قابل تحسین ہے. ڈرامے میں قرآنی آیات کا ترجمہ بھی کیا گیا ہے.


ارطغرل غازی کا پہلا سیزن کچھ عرصہ پہلے نجی ٹی چینل ہم ستارے پر نشر ہو چکا تھا لیکن اس کی پروموشن صحیح نہ ہونے کی وجہ سے لوگوں میں اتنا مقبول نہیں ہو سکا. دوسرا سیزن چینل پر نہ دکھانے کی وجہ شاید کوئی سازش ہو ہوسکتی ہے جو اس ڈرامے کو پاکستان میں نہیں دکھانا چاہتے تھے کیوں کہ ان کو اس ڈرامے کی اہمیت کا پتا تھا کہ اگر ارطغرل غازی ڈرامہ پاکستان میں مشہور ہوا تو یہاں کے ڈراموں پر بڑا اثر پڑے گا.


تقریبا 2 سال پہلے Giveme5 کی ٹیم نے یہ سوچا کہ یہ ڈرامہ اسلامی تاریخ پر مبنی ہے اس ڈرامہ کو پروموٹ کرنا چاہیے تاکہ آج کل کے نوجوان جو ہالی ووڈ کی موویز یا بالی ووڈ کی موویز دیکھ کر اپنا وقت ذایع کر دیتے ہیں وہ اس کو ڈرامے کو دیکھ کر اسلامی کلچر اور سلطنت عثمانیہ کے بارے میں جان سکیں کہ کس طرح سلطنت عثمانیہ کا قیام ہوا اور کس طرح سلطنت عثمانیہ نے 600 سال پوری دنیا پر حکومت کی۔


ان کے کیے گئے ترجمے کو لوگوں نے بہت پسند کیا اور لوگ Giveme5 کے دیوانے ہوتے گئے اور یوں ایک بڑا کارواں بن گیا۔


وزیر اعظم پاکستان عمران خان کی ہدایت پر آج کل پاکستان ٹیلی وژن پر ارطغرل غازی اردو ڈبنگ کے ساتھ نشر کیا جا رہا ہے،لیکن لوگ پھر بھی Giveme5 کے کیے گئے ترجمے والے ڈرامےکو ترجیح دیتے ہیں اس کی وجہ ان کا بہترین ترجمہ اور سب بڑی وجہ ترکی زبان ہے جو لوگوں کے دلوں میں گھر کر گئی ہے لوگ اس کے بغیر ڈرامہ نہیں دیکھنا چاہتے لوگ اس زبان سے آشنا ہو گئے ہیں.

357 views

Drop Me a Line, Let Me Know What You Think

© 2020 by 24newspk.com all rights reserved