top of page
  • 24newspk

شاہد آفریدی نے اگلے ٹیسٹ میچ میں محمد رضوان کو ریسٹ دینے کا مشورہ دے دیا


اسلام آباد(24 نیوز پی کے)قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان اور سپر اسٹار آلراؤنڈر شاہد خان آفریدی نے پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان تیسرے اور آخری ٹیسٹ میچ میں قومی ٹیم کے وکٹ کیپر بلے باز محمد رضوان کو آرام ددینے اور ان کی جگہ سرفراز احمد اور شان مسعود کو کھلانے کا مشورہ دے دیا۔


نجی ٹی وی چینل کو انٹرویو دیتے ہوئے سابق کپتان اور مایہ ناز آلراؤنڈر شاہد خان آفریدی نے کہا کہ میں نے بھی سنا ہے کہ محمد رضوان نے کئی دفعہ خواہش کا اظہار کیا ہے کہ مجھے ٹیسٹ میں بطور اوپنر کھیلنے دیا جائے اور ان کو انگلینڈ کے خلاف ملتان ٹیسٹ میچ میں موقع دیا گیا۔شاہد آفریدی نے کہا کہ اصل میں ہوتا یہ ہے کہ اگر اوپنر نہ ہو تو تیسرے نمبر والا کھلاڑی بطور اوپنر اوپننگ کرتا ہے،جب ایک پلیئر پرفامنس دکھاتا ہے تو وہ سپر اسٹار بن جاتا ہے اور اپنی بات منوانا شروع کر دیتا ہےکہ میں یہاں نہیں یہاں کھیلوں گا۔


شاہد آفریدی نے مزید کہا کہ ایسی صورتحال میں کوچ کا کردار بہت اہم ہے کہ وہ کسی کھلاڑی کو منفرد لے کر چلنا چاہتا ہے یا پھر بطور ٹیم پلیئر ہی، میرا خیال ہے کہ فیصلہ وہ ہونا چاہیے جو ٹیم کیلئے بہتر ہو نہ کہ کسی کو فیور دی جائے، کسی بھی بلے باز کی ناکامی کا سوال بیٹنگ کوچ سے ہی کیا جائے گا۔


Islamabad (24 News PK) The former captain of the national cricket team and superstar all-rounder Shahid Khan Afridi has advised to rest the wicket-keeper batsman of the national team, Mohammad Rizwan, in the third and final Test match between Pakistan and England. Advised to play Sarfraz Ahmed and Shan Masood instead.


While giving an interview to a private TV channel, former captain and famous all-rounder Shahid Khan Afridi said that I have also heard that Mohammad Rizwan has expressed his desire many times to let me play as an opener in Tests and to play him in England. Shahid Afridi said that what actually happens is that if there is no opener, the third-ranked player opens as an opener, when a player shows performance, he becomes a superstar and his It starts saying that I will play here and not here.


Shahid Afridi added that the role of a coach is very important in such a situation that he wants to take a player individually or as a team player, I think the decision should be what is best for the team and not for anyone. Be it favoured, any batsman failure will be questioned by the batting coach.

9 views0 comments
bottom of page