• 24News pk

عالمی سطح پر کورونا وائرس کے کیسز میں کمی حوصلہ افزا ،قابو پانے کے لیے مسلسل نگرانی کی ضرورت ہے


جنیوا۔2فروری (24 نیوز پی کے-اے پی پی):عالمی ادارہ صحت کے ڈائریکٹر جنرل ٹیڈروس ایڈہانوم گیبریسزنے کہا ہے کہ عالمی سطح پر کورونا وائرس کے کیسز میں لگاتارتیسرے ہفتے کمی حوصلہ افزا ہے لیکن کورونا وائرس پر قابو پانے کے لیے مسلسل نگرانی کی ضرورت ہے۔ انہوں نے گزشتہ روز جنیوا میں کورونا وائرس سے متعلق گلوبل سکور کے نام سے نئی رپورٹ جاری کرتے ہوئے بریفنگ کے دوران کہا کہ اب بھی متعدد ممالک ایسے ہیں جہاں کورونا وائرس کے متاثرہ کیسز کی تعداد بڑھ رہی ہے لیکن عالمی سطح پر متاثرہ کیسز میں کمی حوصلہ افزا بات ہے جس سے یہ اندزاہ ہوتا کہ کورونا وائرس کی نئی قسم کے پھیلائو کے ساتھ بھی اس پر قابو پایا جا سکتا ہے اور یہ بھی کہ اگر ہم لوگوں کی صحت کے تحفظ کے اقدامات پر عملدرآمد جاری رکھیں تو ہم اس وائرس پر قابو پا سکتے ہیں اور لوگوں کی زندگیاں بچا سکتے ہیں۔ انہوں نے عالمی سطح پر متاثرہ کیسز میں ہونے والی کمی کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے کورونا وائرس کی پیچیدہ صورتحال سے بھی خبردار کیا۔ انہوں نے کہا کہ ماضی میں تقریباً تمام ممالک میں متاثرہ کیسز میں کمی ہوئی اور حکومتوں نے بہت جلد سرگرمیاں بحال کیں اور لوگوں نے حفاظتی اقدامات پر عملدرآمد کرنا چھوڑ دیا جو وائرس کے دوبارہ پھیلائو کی وجہ بنے ۔


عالمی ادراہ صحت کے سربراہ نے زور دیا کہ جیسا کہ کورونا وائرس سے بچائو کی ویکسین لگنا شروع ہو گئی ہے لیکن اس کے ساتھ ساتھ لوگوں کو خود اور دوسروں کے تحفظ کو یقینی بنانے کے لیے حفاظتی اقدامات پر عملدرآمد کرنا بھی ضروری ہے جبکہ حکومتوں کے لیے ضروری ہے کہ وہ لوگوں کے لیے کام کرنے والی جگہوں اور دفاتر کو زیادہ محفوظ بنائے اور قرنطینہ میں قیام کوآسان بنائے ۔ انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس کے پھیلائو پر قابو پا کر زندگیوں کو بچانا ہے اور اس کے بعد اس کے مزید مختلف حالتوں میں پھیلائو کے امکانات کو کم کر کے ویکسین کے موثر ہونے کو یقینی بنانے میں ملتی ہے ۔ پیر کو جاری کی گئی نئی رپورٹ گلوبل سکور کا مخفف سروے، اعدادوشمار، اصلاح ، جائزہ لینا اور قابل بنانا ہے ۔ رپورٹ میں 133 ممالک کے ہیلتھ انفارمیشن سسٹم کا احاطہ کیا گیا جو عالمی آبادی کا صرف 90فیصد سے کم ہے۔ رپورٹ میں بتایا گیا کہ عالمی سطح پر ہونے ولای ہر 10 اموات میں 4 اموات اب بھی غیر رجسٹرہیں جبکہ افریقی خطے میں 10 اموات میں سے ایک موت ریکارڈ کا حصہ ہے۔ عالمی ادارہ صحت نے کہا کہ دنیا بھر میں کورونا وائرس کے صحیح اعدادوشمار کی کمی نے کورونا وائرس کی وبا سے اموات کے حقیقی اثرات کے بارے میں افہام و تفہیم کو محدود کردیا ہے جس سے اس کے خلاف اقدامات کی منصوبہ بندی کو نقصان پہنچتا ہے۔


3 views0 comments

Subscribe to 24Newspk

Its all about urdu news

  • Twitter
  • Facebook
  • Linkedin

© 2021 by 24newspk.com all rights reserved