• 24newspk

میرا نہیں خیال کہ ان 3 کھلاڑیوں کو کوئی بھی اچھی انٹرنیشنل ٹیم جگہ دے گی، عاقب جاوید



24 نیوز پی کے:پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق فاسٹ باؤلر عاقب جاوید نے پاکستان کے مڈل آڈر پر بات کرتے ہوئے کہا کہ ہم جن کھلاڑیوں کو مڈل آڈر میں کھلا رہے ہیں ان کو کوئی بھی اچھی انٹرنیشنل ٹیم جگہ نہیں دے گی۔


انہوں نے کہا کہ مڈل آڈر بیٹنگ میں جب کہتے ہیں کہ اس طرح کے پلیئر نہیں ہیں جیسے محمد یوسف، انضمام، یونس خان، شعیب ملک اور محمد حفیظ جیسے کھلاڑی جب کھیلتے تھے تو اس کی کیا وجہ ہے کہ انہوں نے 10 12 15 سالوں تک کھیلا۔جو ہمارا آج کا مڈل آڈر ہے آصف علی، افتخار، خوشدل شاہ ان کو آپ کہاں ریٹ کرتے ہیں ان کو تو پاکستان میں بھی کہیں ریٹ نہیں کر سکتے۔

اس کی وجہ یہ ہے کہ ان تینوں کا کوئی بیک اپ نہیں ہے یہ ڈراپ ہوتے ہیں بغیر کسی پرفامنس یہ واپس آجاتے ہیں کیوں کہ جب سلیکٹرز بھی دیکھتے ہیں تو انہیں ان تینوں کے علاوہ چوائسز نہیں متلی۔انہوں نے مزید کہا کہ اگر ان کا بیک اپ نہیں ہے تو آپ کی ڈیولپمنٹ کہاں ہے؟ آپ کی آے ٹیم میں بھی ایسے پلیئرز نہیں جو ان کی جگہ لے سکیں۔


انہوں نے یہ کہہ کر اختتام کیا کہ میرا نہیں خیال کہ کوئی بھی ٹاپ رینکڈ انٹرنیشنل ٹیم آصف علی خوشدل اور افتخار کو اپنی ٹیم میں جگہ دے گی۔


24 News PK: The former fast bowler of Pakistan cricket team, Aqib Javed, while talking about Pakistan's middle order, said that no good international team will give place to the players we are feeding in the middle order.


He said that in the middle order batting, when they say that there are no such players like Muhammad Yusuf, Inzamam, Younis Khan, Shoaib Malik and Muhammad Hafeez when they used to play, what is the reason that they played for 10, 12, 15 years. Our current middle order, Asif Ali, Iftikhar, Khushdil Shah, where do you rate them, you cannot rate them anywhere even in Pakistan.



The reason for this is that these three have no backup, they are dropped without any performance, they come back because when the selectors also see, they are not fed up with the choices other than these three. He added that if their If there is no backup, where is your development? Even in your A team, there are no players who can replace him.

He concluded by saying that I don't think any top ranked international team will include Asif Ali Khushdal and Iftikhar in their team.

37 views0 comments