• 24Newspk

میں 2002 میں 400 رنز مکمل کرکے عالمی ریکارڈ قائم کرسکتا تھا:انضمام



اسلام آباد (24نیوز پی کے): سابق کپتان انضمام الحق کا ماننا ہے کہ وہ 3 مئی 2002 کو 400 رنز بنا کر ٹیسٹ کرکٹ میں سب سے زیادہ اسکور کر کے دنیا کے پہلے بلے باز بن سکتے تھے اگر میرے ساتھ بیٹنگ کے لئے آئے کھلاڑی بیٹسمین ہوتے ۔ “03 مئی 2002 کو بہت گرم دن تھا، نیوزی لینڈ کے کھلاڑی بلکل تھک چکے تھے اس کی وجہ یہ ہے کہ وہ ایسے موسم کے عادی نہیں تھے ۔ان کی چال سے اندازہ ہو گیا تھا کہ جیسے وہ کہہ رہے ہوں کہ بس کرین آپ نے جتنا اسکور کرنا تھا کر لیا اب ہمیں گراؤنڈ سے باہر جانے دیں۔ پاکستان اور نیوزی لینڈ کرکٹ سیریز 2002 کے 2 ٹیسٹ میچز کے افتتاحی میچ جو لاہور میں کھیلا گیا اس کی یاد تازہ کرتے ہوئے کہا۔


“ہمارے پاس بہت وقت تھا اسکور بھی نہت بن گیا تھا اور رنز آسانی سے بن رہے تھے لیکن مسئلہ یہ تھا کہ ہمارے پاس وکٹ نہیں تھی۔آخری کھلاڑی جب بیٹنگ کرنے آئے تو میں نے اس سے پوچھا کہ کیا آپ ایک اوور میں دو سے تین گیندوں کا سامنا کر سکو گے؟ لیکن اس نے میری طرف مسکراتے ہوئے دیکھا جیسے وہ کہہ رہا ہو ، ’’ نہیں ، تم جو چاہو کرو ‘‘۔ میرے پاس چھکے لگانے کے سوا کوئی چارہ نہیں بچا تھا۔ لیکن اس اوور میں جب میں باؤنڈری پر کیچ آؤٹ ہوا تو میں نے پہلے ہی تین چھکے مارے تھے۔ انضمام الحق کا مزید کہنا تھا کہ "مجھے 400 رنز اسکور عبور کرنے اور عالمی ریکارڈ قائم کرنے کے لئے صرف ایک گھنٹہ بیٹنگ کرنے کی ضرورت تھی۔"انضمام الحق کا کہنا کہ وہ ٹیسٹ میچ میری زندگی کا سب سے زیادہ یادگار دن تھا۔انضمام الحق نے کہا کہ لیجنڈری کرکٹر حنیف محمد 337 رنز کا ریکارڈ آرام سے توڑ سکتا تھا لیکن ان کا ریکارڈ توڑنا میرا مقصد نہیں تھا ۔لیکن عالمی ریکارڈ بنا کر دنیا میں نام کمانا کوئی غلط بات نہیں تھی۔ 50 ٹیسٹ انضمام ، جنہوں نے 120 ٹیسٹ میں 8،830 رنز اور 378 ون ڈے میچوں میں 11739 رنز بنائے انضمام نے 439 گیندوں میں 329 رنز اور اسپیڈ استار شعیب اختر کی کچھ تیز بولنگ کی بدولت پاکستان نے نیوزی لینڈ کو اننگ اور 324 رنز سے شکست دے دی

89 views

Subscribe to 24Newspk 

Contact us

© 2020 by 24newspk.com all rights reserved

  • Facebook
  • Twitter
  • YouTube