• 24Newspk

نویں اور گیارہویں جماعت کا رزلٹ رکھنے والے طلباء کو اگلی جماعتوں میں پروموٹ کر دیا جائے گا



اسلام آباد ۔ 14 مئی (24 نیوز پی کے) وفاقی وزیر تعلیم و پیشہ ورانہ تربیت شفقت محمود نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ آج تمام صوبائی وزرا تعلیم کا اجلاس ہوا جس میں متفقہ فیصلہ کیاگیا کہ تمام طلباء جن کے نویں اور گیارہویں جماعت پاس کر چکے ہیں ان کا امتحان نہیں ہوگا ان کو ان کی نویں اور گیارہویں کی پرفارمنس کی بنیاد پر دسویں اور بارہویں جماعت میں پروموٹ کیا جا ئے گا۔


اس میں ایک اور بھی فیصلہ کیا گیا کہ نویں جماعت اور گیارہویں جماعت کے طلباء کو پروموٹ کیا جا رہا ہے ان کو اضافی %3 فیصد مارکس دیے جائیں گے،کیوں کہ ہوتا یہ ہی ہے نویں جماعت کے مقابلے میں دسویں جماعت میں اور گیارہویں جماعت کے مقابلے میں بارہویں جماعت میں طلباء زیادہ محنت کرتے ہیں تاکہ اچھے مارکس آئیں اسی بات کو مد نظر رکھتے ہوئے یہ فیصلہ کیا ہے۔


شفقت محمود نے کہا کہ جمعرات کو بلائے جانے والے اجلاس میں تمام صوبائی وزیر تعلیم کو بلایا گیا تھا تمام فیصلے باہمی اتفاق رائے اور مشاورت سے کئے گئے، بچوں کی صحت پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جا سکتا۔ان کا مزید کہنا تھا کہ جو طلباء نویں اورگیارہویں جماعت کے رزلٹ سے مطمئن نہیں وہ مخصوص امتحانات میں حصہ لے سکیں گے گیارہوںں اور بارہویں کلاس کے ایک ساتھ امتحانات دینے والے طلباء کے مخصوص امتحانات ستمبر میں ہوں گے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ چالیس فیصد مضامین میں فیل طلباء کو پاسنگ مارکس دیئے جائیں گے


وفاقی وزیر تعلیم نے طلباء کو ہدایت کی کہ مخصوص امتحانات میں حصہ لینے والے طلباء یکم جولائی تک اپنے متعلقہ بورڈز کو آگاہ کر دیں۔ انہوں نے کہا کہ مخصوص امتحانات کا بھی ہم حالات کا جائزہ لے کر کریں گے۔ یونیورسٹیوں کے بارے میں ایک سوال پر وفاقی وزیر نے کہا کہ ہم نہیں چاہتے کہ یونیورسٹیوں کے اندرونی معاملات میں مداخلت کریں، اس بارے میں فیصلہ کرنے کے لئے ایچ ای سی کو ہدایت کی ہے، ایچ ای سی یونیورسٹیوں کے ساتھ مل کر فیصلہ کریں۔



Subscribe to 24Newspk 

Contact us

© 2020 by 24newspk.com all rights reserved

  • Facebook
  • Twitter
  • YouTube