• 24Newspk

ورلڈکپ 1999 میں بنگلہ دیش کے ہاتھوں پاکستان کی ناقابل یقین شکست، وسیم اکرم کا الزامات پر جواب



لاہور (24 نیوز پی کے) پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان اور ورلڈ کپ 1992 کے ہیرو وسیم اکرم نے سوشل میڈیا پر بنگلادیشی کھلاڑیوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ورلڈ کپ 1999 میں بنگلادیش کے ہاتھوں شکست کے بعد بہت مایوسی ہوئی تھی۔بنگلادیش میرے دل کے بہت قریب ہے۔


سابقکپتان وسیم اکرم نے بنگلہ دیش کے کرکٹرز تمیم اقبال اور دیگر کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ بنگلادیش ہمیشہ میرے دل کے قریب رہا ہے اور میں اس کو بہت مس کرتا ہوں ۔بنگلادیش کرکٹ پر بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ پچھلے دس سالوں میں بنگلادیش نے بہت اچھی کرکٹ کھیلی ہے اور اپنی کرکٹ میں بہت بہتی لائے ہیں، ان کا مزید کہنا تھا کہ شکیب الحسن مشفیق الرحیم مستفیض الرحمان بہت اچھے کھلاڑی ہیں اگر اس ٹائیم شکیب الحسن اور تمیم اقبال کا سامنا کرنا پڑتا تو بہت دلچسپ مقابلہ ہوتا۔



سابق کپتان کا ورلڈ کپ 1999 میں پاکستان کی بنگلادیش کے ہاتھوں شکست پر کہنا تھا کہ بنگلادیش بہت اچھا کھیلی تھی اور وہ جیت منصفاہ تھی اور بنگلادیش کی ٹٰم پاکستان سے زیادہ اچھا کھیلی اس شکست کے بعد بہت مایوسی ہوئی تھی لیکن ان کھلاڑیوں کی واقعی تعریف بنتی ہے جن کھلاڑیوں نے بہت اچھی کھیلی اور اپنی ٹٰیم کو جتوایا۔


واضح رہے کہ ورلڈ کپ 1999 کا بنگلادیش کے خلاف میچ کے سمیت تین میچز کے بارے سابق چیئرمین پی سی بی سمیت بہت سے کھلاڑیوں نے مشکوک قرار دیا تھا اور تحقیقات کروانے کا کہا تھا۔پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان عامر سہیل نے تو وسیم اکرم پر براہ راست الزام لگا دیا تھا کہ وہ 1992 کے ورلڈ کپ کے کبھی بھی نہیں چاہتے تھے کہ پاکستان کوئی ورلڈ کپ جیتے۔


3 views

Subscribe to 24Newspk 

Contact us

© 2020 by 24newspk.com all rights reserved

  • Facebook
  • Twitter
  • YouTube