• 24News pk

پاکستان اور جنوبی افریقہ کے مابین 27 واں ٹیسٹ میچ آج نیشنل اسٹیڈیم کراچی میں کھیلا جا رہا ہے


کراچی۔26جنوری (24 نیوز پی کے):پاکستان اور جنوبی افریقہ کے مابین دو ٹیسٹ میچوں پر مشتمل سیریز کا پہلا میچ آج منگل سے کراچی کے تاریخی گرائونڈ نیشنل سٹیڈیم میں کھیلا جا رہا ہے۔ یہ 27 واں موقع ہوگا جب دونوں ممالک کی ٹیمیں طویل طرز کی کرکٹ میں مدمقابل ہو رہی ہیں۔ دونوں ٹیمیں 19 جنوری 1995 کو پہلی مرتبہ ٹیسٹ میچ کھیلنے جوہانسبرگ کے میدان پر اتری تھیں جہاں فتح حاصل کرنے والی میزبان ٹیم کا پاکستان کے خلاف ٹیسٹ ریکارڈ اب بھی بہترین ہے۔ اب تک کھیلے گئے 26 میچوںمیں سے 4 مقابلوں میں پاکستان نے کامیابی حاصل کی جبکہ 7 میچز ڈرا ہوئے۔ 15 میچوں میں جنوبی افریقہ نے فتح سمیٹی۔ دونوں ٹیموں کے مابین آخری ٹیسٹ میچ جنوری 2019میں جنوبی افریقہ کے سپر سپورٹس کرکٹ سٹیڈیم میں کھیلا گیا تھا جہاں فتح میزبان ٹیم کے حصے میں آئی۔ اس سے قبل پاکستان اپنی سرزمین پر کل 7 ٹیسٹ میچوں میں جنوبی افریقہ کی میزبانی کرچکا ہے جہاں ایک میں اسے فتح اور 2 میں شکست کا سامنا کرنا پڑا جبکہ 4 میچ ڈرا ہوگئے۔ دونوں ٹیموں کے مابین نیشنل سٹیڈیم کراچی میں (2007) میں کھیلا گیا واحد ٹیسٹ میچ جنوبی افریقہ نے جیتا تھا۔ قومی ٹیم کے موجودہ ٹیسٹ سکواڈ میں شامل اظہر علی سب سے زیادہ مرتبہ ٹیسٹ کرکٹ میں حریف ٹیم کا سامنا کرچکے ہیں۔ وہ جنوبی افریقہ کے خلاف 10 ٹیسٹ میچوں میں 25.31 کی اوسط سے 481 رنز بناچکے ہیں تاہم کپتان بابراعظم اب تک 3 ٹیسٹ میچوں میں حریف ٹیم کے خلاف ایکشن میں نظر آئے، انہوں نے 36.83 کی اوسط سے 221 رنز بنائے جس میں 2 نصف سنچریاں بھی شامل ہیں۔ قومی کرکٹ ٹیم کے موجودہ فاسٹ بالنگ اٹیک کو لیڈ کرنے والے فاسٹ بالر شاہین شاہ آفریدی اب تک 2 ٹیسٹ میچوں میں جنوبی افریقہ کے خلاف ایکشن میں آچکے ہیں۔ بائیں ہاتھ کے فاسٹ بالر ان 2 ٹیسٹ میچوں کی 3 اننگز میں 9 وکٹیں اپنے نام کرچکے ہیں۔ آلرائونڈر فہیم اشرف صرف ایک مرتبہ حریف ٹیم کے مدمقابل آچکے ہیں، انہوں نے اس میچ میں 6 کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی تھی۔مہمان ٹیم کے کپتان کوئنٹن ڈی کوک کاپاکستان کے خلاف ریکارڈ موجودہ سکواڈ میں شامل دیگر کھلاڑیوں میں سب سے بہتر ہے۔انہوں نے پاکستان کے خلاف اب تک کھیلے گئے 3 ٹیسٹ میچوں میں 62.75 کی اوسط سے 251 رنز بنارکھے ہیں۔ سابق کپتان فاف ڈوپلیسی میزبان ٹیم کے خلاف 7 ٹیسٹ میچوں میں شرکت کرچکے ہیں، ان کے رنز بنانے کی کل تعداد 246 ہے۔ دونوں ممالک کے خلاف آخری سیریز میں کاگیسو رابادا نے 18.70 کی اوسط سے 17 وکٹیں اپنے نام کی تھیں۔ دونوں ٹیموں کے کھلاڑیوں نے ایک دوسرے پر سبقت لے جانے کے بھرپور پریکٹس سیشن اور ٹریننگ کی ہے۔ آئی سی سی ورلڈ ٹیسٹ چیمپئن شپ میں شامل یہ دونوں ٹیسٹ میچز پاکستان کے لیے بہت اہمیت کے حامل ہیں،اگر پاکستان کرکٹ ٹیم دونوں میچوں میں اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کرتی ہے تو وہ پوائنٹس ٹیبل پر اپنی پوزیشن مستحکم کرنے میں کامیاب ہوجائے گی۔ قومی کرکٹ ٹیم کے ہیڈ کوچ، کپتان بابراعظم اور دیگر کا خیال ہے کہ سکواڈ میں شامل تمام کھلاڑی بہترین نتائج دینے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔جنوبی افریقہ کے ہیڈ کوچ مارک باچر کاکہناہے کہ پاکستان آسان حریف نہیں، انہیں ہوم گرائونڈ پر شکست دینے کے لئے بھرپور حکمت عملی کے ساتھ میدان میں اتریں گے۔

13 views0 comments

Subscribe to 24Newspk

Its all about urdu news

  • Twitter
  • Facebook
  • Linkedin

© 2021 by 24newspk.com all rights reserved