• 24newspk

پی ایس ایل فائنل:محمد رضوان اور ملتان سلطانز نے تاریخ رقم کر دی!

Updated: Jul 10


ملتان سلطانز نے پشاور زلمی کو 47 رنز سے شکست دے کر پی ایس ایل 6 کی ٹرافی اپنے نام کرلی۔


ویب ڈیسک ( 24 نیوز پی کے) ابوظہبی کے شیخ زید اسٹیڈیم میں کھیلے گئے پاکستان سپر لیگ کے چھٹے ایڈیشن کے فائنل میں ملتان سلطانز نے صہیب مقصود اور ریلی روسوو کی جارحانہ اننگز کی بدولت مقررہ 20 اوورز میں 4 وکٹ کے نقصان پر 206 رنز بنائے جس کے جواب میں پشاور زلمی کی پوری ٹیم 9 وکٹ کے نقصان پر 159 رنز ہی بناسکی۔ہدف کے تعاقب میں پشاور زلمی کی جانب سے کامران اکمل اور حضرت اللہ زازئی نے ٹیم کو اچھا آغاز فراہم کیا تاہم بدقسمتی سے 42 رنز پر دونوں کھلاڑی پویلین لوٹ گئے۔ کامران اکمل 36 اور زازئی 6 رنز بناکر آؤٹ ہوئے جب کہ جوناتھن ویلز بھی 6 رنز بنانے کے بعد رن آؤٹ ہوگئے۔



58 رنز پر 3 وکٹیں گرنے کے بعد شعیب ملک اور رومن پاول نے جارحانہ کھیل پیش کرکے پشاور زلمی کو میچ میں واپس لے آئے تاہم پاول 14 گیندوں پر 23 رنز بنانے کے بعد آؤٹ ہوگئے جب کہ ملک بھی 28 گیندوں پر 48 رنز بنانے کے بعد ہمت ہار گئے۔

عمران طاہر نے ایک ہی اوور میں شیرفن ردرفورڈ ، وہاب ریاض اور محمد عمران کو پویلین بھیج کر پشاور زلمی کی رہی سہی امیدوں پر پانی پھیر دیا۔ عماد بٹ 7 رنز بناکر عمران خان کا شکار بنے۔


ملتان سلطانز کی جانب سے عمران طاہر 3، بلیسنگ مزارابانی 2، عمران خان اور سہیل تنویر ایک ایک وکٹ حاصل کرنے میں کامیاب رہے۔

اس سے قبل پشاور زلمی کے کپتان وہاب ریاض نے ٹاس جیت کر پہلے ملتان سلطانز کو بیٹنگ کی دعوت دی۔ محمد رضوان اور شان مسعود نے ٹیم کو پراعتماد آغاز فراہم کیا اور پہلی وکٹ 68 رنز پر گری جب شان مسعود 37 رنز بنانے کے بعد آؤٹ ہوئے۔ملتان سلطانز کی دوسری وکٹ کپتان محمد رضوان کی صورت میں گری جو 30 رنز بنانے کے بعد کامران اکمل کو کیچ دے بیٹھے تاہم رضوان کے آؤٹ ہونے کے بعد ریلی روسوو اور شعیب مقصود نے لاٹھی چارچ شروع کردیا۔


مقصود نے 26 گیندوں پر اپنی نصف سنچری مکمل کی جب کہ روسوو نے صرف 20 گیندوں پر نصف سنچری بنائی تاہم وہ اپنی اننگز کو آگے نہ بڑھاسکے، ان کی اننگز میں 3 چھکے اور 5 چوکے شامل تھے۔ مقصود 65 اور خوشدل شاہ 15 رنز پر ناٹ آؤٹ رہے۔پشاور زلمی کی جانب سے محمد عمران اور ثمین گل نے 2،2 وکٹیں حاصل کیں۔واضح رہے پی ایس ایل کی فاتح ٹیم کو ساڑھے 7 کروڑاور ہارنے والی ٹیم کو تین کروڑ کی انعامی رقم ملے گی جب کہ بہترین بولر، فیلڈر اور وکٹ کیپر کو 8،8 لاکھ روپے کے چیک دیے جائیں گے اور اسپرٹ آف کرکٹ ایوارڈ کیلیے 32 لاکھ روپے رکھے گئے ہیں۔





11 views0 comments