• 24newspk

پی ایس ایل میں 1یا 2 پرفامنس پر قومی ٹیم میں رکھ لیا جاتا ہے؟ شاہد آفریدی پی سی بی پر برس پڑے


ویب ڈیسک ( 24 نیوز پی کے) پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان شاہد خان آفریدی نے قومی کرکٹ ٹیم کی سلیکشن پالیسی پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملک کی نمائندگی کا تمام تر عمل انتہائی آسان بنا دیا گیا ہے ۔


کشمیر پریمیئر لیگ کی ڈرافٹنگ کے دوران 44 سالہ سابق قومی کپتان کا کہنا تھا کہ پاکستانی ٹیم میں آنے سے قبل ہر کھلاڑی کو کم از کم 2 سے 3 سال تک ڈومیسٹک کرکٹ کھیلنے کا موقع دیا جائے کیونکہ کسی بھی سطح کی کرکٹ میں ایک یا دو مرتبہ کارکردگی کو قومی ٹیم میں شمولیت کیلئے قابل غور سمجھ لیا جاتا ہے جو انتہائی غلط ہے کیونکہ کرکٹرز کو ڈومیسٹک کرکٹ کھیلنے دی جائے تاکہ وہ خود کو مستحکم کر سکیں۔

ن کا کہنا تھا کہ بیٹسمینوں کو کم از کم دو سے تین جب کہ فاسٹ بائولرز کو ایک سے دو سال کی ڈومیسٹک کرکٹ کے بعد مواقع دیئے جائیں اور ملک کیلئے کھیلنا اتنا آسان نہ بنایا جائے کہ کوئی بھی اس اعزاز کا مالک بن جائے ۔شاہد آفریدی کا کہنا تھا کہ کھلاڑی کا خود پر بھروسہ اہمیت کا حامل ہے جب کہ اسے علم ہونا چاہئے کہ وہ کس نمبر پر زیادہ بہتر انداز سے بیٹنگ کر سکتا ہے ۔


203 views0 comments