• 24newspk

کیا سرفراز کا کریر ختم ہو گیا؟ نیشنل ٹی ٹوئنٹی کپ میں بہترین پرفامنس کے باوجود سرفراز کی جگہ محمد حا


24 نیوز پی کے:چیف سلیکٹر محمد وسیم نے بالآخر سابق کپتان سرفراز احمد کو آئندہ ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ اور انگلینڈ کی سیریز کے لیے اسکواڈ سے باہر کرنے پر اپنی خاموشی توڑ دی ہے۔

جاری قومی ٹی ٹوئنٹی کپ میں بلے سے اچھی فارم کے باوجود سرفراز کا پاکستانی اسکواڈ سے اخراج بہت سوں کے لیے حیران کن تھا۔ تاہم، محمد حارث کے انتخاب کے دفاع کے لیے، وسیم اس خیال سے دور تھے کہ نوجوان وکٹ کیپر ضرورت پڑنے پر بیٹنگ کا آغاز کرنے کے اہل ہیں۔چیف سلیکٹر محمدوسیم نے دی نیوز کو بتایا، “چونکہ محمد رضوان ایک اوپنر ہیں، ہمیں صرف ایک ریزرو وکٹ کیپر کی ضرورت ہوگی اگر وہ (رضوان) ان فٹ ہو یا بیٹنگ کرنے کے قابل نہ ہو۔” اس صورت میں ہمیں ایک اوپننگ بلے باز کی ضرورت ہوگی اور حارث اس کے لیے مکمل طور پر اہل ہیں۔


ان کا ماننا ہے کہ سابق کپتان لوئر آرڈر پر بیٹنگ میں کوئی فرق نہیں ڈال سکتے۔ “عام طور پر، ٹیم کو چھ یا سات نمبر پر پاور ہٹر کی ضرورت ہوتی ہے،” انہوں نے مزید کہا۔“سرفراز، تاہم، ریڈ بال کرکٹ کے لیے بیک اپ وکٹ کیپر ہیں جہاں ان کے تجربے کی ضرورت ہے۔ ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کے لیے ٹیم میں ان کا انتخاب بھی زیر بحث آیا لیکن آخر میں ہمیں لگتا ہے کہ رضوان کا متبادل ایسا ہونا چاہیے جو اوپننگ بھی کر سکتا ہو۔


آپ کو بتاتے چلیں کہ سابق کپتان سرفراز احمد کو ورلڈ کپ 2019 کے بعد ٹیم کی کپتانی سے بھی ہٹادیا گیا اور ٹیم میں زیادہ کھلایا بھی نہیں گیا صرف بارہویں کھلاڑی کے طور پر ہی رہے۔سرفراز احمد نے پچھلے سال نومبر میں آخری انٹرنیشنل میچ کھیلا تھا انہوں نے بنگلادیش کے خلاف ٹی 20 میچ کھیلا تھا۔



24Newspk: Chief selector Muhammad Wasim has finally broken his silence on dropping former captain Sarfraz Ahmed from the squad for the upcoming T20 World Cup and England series.


Despite his good form with the bat in the ongoing National T20 Cup, Sarfraz's exclusion from the Pakistan squad came as a surprise to many.

However, defending the selection of Mohammad Haris, Wasim was far from convinced that the young wicketkeeper is capable of opening the batting if required. Chief selector Mohammad Wasim told The News, "Since Mohammad Rizwan is an opener, we have Only one reserve wicket keeper will be needed if he (Rizwan) is unfit or unable to bat." In that case we will need an opening batsman and Harris is fully qualified for that.



He believes that the former captain cannot make a difference in the lower order batting. "Normally, a team needs a power hitter at number six or seven," he added. "Sarfraz, however, is a backup wicketkeeper for red ball cricket where his experience is needed. His selection in the team for the T20 World Cup was also discussed but in the end we feel that Rizwan's replacement should be someone who can also open.



Let us tell you that the former captain Sarfraz Ahmed was also removed from the captaincy of the team after the World Cup 2019 and was not fed much in the team only as the twelfth player. Sarfraz Ahmed played the last international match in November last year. He had played a T20 match against Bangladesh.

188 views0 comments